جب کوئی انسان آپ کو زیادہ تنگ یا پریشان کرے

اگر کوئی انسان آپ کو دکھ دیتا ہے پریشان کرتا ہے تو اس کا بڑا بہترین حل یہ وظیفہ ہے ۔پہلی بات تو آپ غور کیجئے کہیں آپ کی کسی بات میں غلطی تو نہیں اگر غلطی ہے تو اسے درست کریں اور دوسری بات قرآن کہتا ہے اگر کوئی انسان تمہارے ساتھ برائی کرے تو تم اس کا جواب بہترین طریقے سے اچھائی سے دو اگر تم ایسا کرو گے توتمہارے بدترین دشمن بھی تمہاری تعریف کریں گے اور تمہارے خیر خواہ ہوجائیں گے لیکن لازم یہ ہے کہ آپ ہمیشہ اچھائی کریں پھر اس کا اثر آپ کے سامنے ہوگا اور ایک اور کام بھی کر لیجئے اگر کوئی انسان آپ کو تنگ کرتا ہے اگر آپ کو کسی سے ڈر لگتا ہے یا کسی قسم کا کا آپ کو خوف ہے۔

کہ کوئی آپ پر جادو نہ کر دے کوئی تعویذ نہ ڈال دے یا کوئی انسان آپ کے رشتے میں یا آپ کے گھر میں کوئی پریشانی نہ کر دے تو آپ صرف ایک کام کر لیجئے روزانہ صبح اور شام قرآن کی آخری دو سورتیں سورہ الفلق اور سورۃ الناس کو پڑھ کر اپنے گھر پر اپنے جسم پر دم کرلیجئے ان سورتوں کو پڑھنے والے کو اللہ حسد کرنے والے لوگوں سے شیاطین سے جادوجنات سے برے تعویذ سے اور دنیامیں جو جو چیزیں جو انسان کو نقصان پہنچا سکتی ہیں اللہ ان تمام چیزوں سے اس بندے کو اپنی حفاظت میں لے لیتے ہیں ۔ان دو سورتوں کو پڑھنے والا ہمیشہ اس کا دل بے خوف ہوگا اس کے دل میں ڈر نہ ہوگا یہ دو سورتیں بڑی بہترین ہیں۔

نظر بند کا علاج ہے ڈر کا علاج ہے حسد کرنے والے نقصان پہنچانے والے لوگوں کا بہترین علاج ہے شیاطین جنات کا بہترین علاج ہے بیماریوں کا بہترین علاج ہے اگر آپ ان دوسورتوں کو روزانہ پڑھتے رہے چند دن چند ہفتے کے عبد آپ دیکھیں گے ہر طرف سکون ہوگا دل میں سکون ہوگا گھر میں سکون ہوگا اور زندگی بڑی بہترین گزرتی جائے گی اور جو لوگ آپ کو تنگ کرتے ہیں اللہ ان کو خود ہی آپ سے دور کر دے گا اور ان کو راہ راست پر لے آئے گا۔دشمنوں سے بچاؤ کیلئے یوں تو انسان بہت سے تدابیر کرتا رہتا ہے تاہم دشمنوں کے چھپے ہوئے حربے جیسے جادو، سازشیں وغیرہ ان سے کئی مرتبہ بچنا مشکل ہو جاتا ہے اور آپ دشمن کے وار کا شکار ہو جاتے ہیں۔ اپنے دشمنوں سے حفاظت کیلئے ایک ایماندار اللہ والے سرکاری افسر کا آزمودہ وظیفہ قارئین کی خدمت میں پیش ہے۔

ان سرکاری افسر کا نام ابرار صدیقی ہے اور انہوں نے اپنی ایک تحریر ایک سوشل میڈیا سائٹ کو بھیجی ہے جو کہ صرف قارئین کی فلاح کیلئے نیک نیتی کے جذبے کے تحت یہاں پیش کی جا رہی ہے۔ وہ لکھتے ہیں کہ میرا نام ابرار صدیقی ہے اور میں کراچی میں رہتا ہوں .نظام بھائی میں اس بات پر پورا یقین رکھتا ہوں کہ جب تک اللہ نہ چاہے کوئی کسی کابُرا نہیں کرسکتا ۔میں نے ملازمت کے دوران جہاں جہاں افسری کی کسی کے ساتھ جان بوجھ کر بُرا نہیں کیا،خدانخواستہ کسی سے برا ہوگیا ہوتو الگ بات ہے اوراس کے لئے میں نے اللہ سے ہمیشہ توبہ استغفار ہی کی ہے.اس کی استطاعت اللہ نے مجھے اپنے ایک نیک سیرت بندے کی وساطت سے فراہم کی ۔ اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔ آمین

Sharing is caring!

Comments are closed.