دل کا آپریشن کروانے سے پہلے 1بار اس کو پی کر دیکھو

سوال : میری والدہ کو ہارٹ اٹیک ہوا تھا جس کی وجہ سے ان کے دل کے پٹھے کمزور ہوگئے ہیں ؟دل کے پٹھے جو کمزور ہوجاتے ہیں اس کا بہترین علاج دو دوائیاں ہیں ایک ہے ارجن کی چھال یہ ایک درخت ہے اللہ سبحانہ نے اس درخت کو پیدا ہی دل کے لئے کیا ہے ارجن کے درخت کو پیدا ہی دل کے لئے کیا ہے تو ارجن کی چھال لو تین انچ لمبی تین انچ چوڑی ،دو کپ پانی لو اس کو اس میں چھوٹاچھوٹا کاٹ کر ڈال کر اچھی طرح پکاؤ جب پانی آدھا رہ جائے تو اس کو اتار لو اس میں سبز الائچی بھی ڈال لیجئے اس میں گڑ یا شہد بھی ڈالا جاسکتا ہے اس کو تین وقت پیئو جتنے لوگوں کو دل کا مسئلہ ہے یہ جو دل کے مسلز ہیں اس کو مایوکارڈیل مسلز کہتے ہیں دل کے پٹھوں کو تقویت دینے کے لئے سب سے بہترین دوائی ارجن کا قہوہ ہے۔

دوسرے نمبر پر ایک دوائی بنائیے ایک کپ ادرک کا رس لیجئے ایک کپ لہسن کا رس لو،ایک سیب کا سرکہ لو،ایک کپ لیموں کا رس لو اس چاروں کو اچھی طرح چھان لو مٹی کے برتن میں ڈال کر اچھی طرح پکاؤ حتی کہ پکاتے پکاتے تین کپ باقی رہ جائیں اس کو ٹھنڈ اکرو تین کپ اس میں شہد ملاؤ اور ان کو مکس کر لیجئے اگر شوگر ہے تو پھر شہد کم ملائیے کھانا کھانے سے آدھا گھنٹہ پہلے پینے والے پانی میں دو بڑے چمچ ڈال کر پیجئے بہترین علاج ہے دل کے پٹھوں کا اور اس کے ساتھ اللہ سبحانہ نے دل کے پٹھوں کو مضبوط کرنے کا سب سے بہترین اور آسان طریقہ بتایا وہ ہاتھ کو سینے پر باندھنا ہے جب ہم ہاتھ کو سینے پر باندھتے ہیں یہ جو ہاتھ ہیں اس ہاتھ کو اللہ نے صرف ہمارے دل کے پٹھوں کو طاقت دینے کے لئے رکھا ہے۔

اس ہاتھ سے سارے کام کرنے کا حکم دیا اور منع فرمایا کوئی کام اس ہاتھ سے کرنا کیوں؟کیونکہ اللہ سبحانہ چاہتے تھے یہ جو دل ہے یہ سارا دن دھڑکتا رہتا ہے دھڑکتا رہتا ہے اس کو سکون چاہئے اس کو آرام چاہئے اس کو ٹکور چاہئے اس دل کو ٹکور دینے کے لئے رب تعالیٰ نے نماز بنائی اور نماز میں دل کو سکون دینے کے لئے سب سے بہترین حالت قیام بنایا اور قیام میں رب تعالیٰ نے فرمایا سب سے پہلے اپنی سوچ کو اپنے دھیان کو اپنے ہر دھیان کو منقطع کرو اپنی ساری سوچوں کو منقطع کرو ساری چیزوں کو اپنے فوکس سے نکال دو ساری فوکس سجدے والی جگہ پر لاؤ اور ہاتھ کو اپنے دل کے بالکل اوپر رکھو ۔ہاتھ سے ایک انرجی نکلتی ہے ایک طاقت نکلتی ہے جو ہمارے دل کو سکون دیتی ہے اور جتنا لمبا قیام کرو گے دل کو اتنا زیادہ سکون ملے گا اور اگر ہم نماز تیزتیز پڑھیں تو پھر دل کو کچھ نہیں ملے گا ۔نماز کو انتہائی آہستہ اتنے پیار سے محبت سے سکون سے پڑھو گے تو دل کو سکون ملے گا جتنا زیادہ دل کو سکون ملے گا آپ کا پورا جسم اتنا قوی رہے گا۔شکریہ

Sharing is caring!

Comments are closed.