”ان 4 قسم کے مردوں سے نکاح مت کریں“

اس انفارمیشن کی وجہ سے میری تمام بہنیں اپنی زندگی بتاہ ہونے سے بچا سکتی ہیں

ہر بہن اپنا رشتہ ہونے سے پہلے ان باتوں کا خیال ضرور رکھیں اور اپنی زندگی کو ایک اچھے انسان کے ہاتھوں میں سونپں۔ دولت شہرت کو دیکھ کر رشتہ نہیں کرنا چاہئے۔ بلکہ اچھے اخلاق والے انسان سے کرنی چاہئے۔ اس بات کا دھیان خاص طور والدین کو رکھنا چاہئے۔یہ انفارمیشن آپ کو اچھا رشتہ ڈھونڈنے میں مددگار ثابت ہوگی ان مردوں سے نکاح کرنے سے بچیں اور اپنی ازواجی زندگی کو تباہ ہونے سے بچائیں۔

۔1۔ پہلا وہ مرد جو کے غیرعورتوں کے ساتھ رغبت رکھتا ہو اور شادی شدہ ہو۔تب بھی اپنی بیوی کے علاوہ دوسری عورتوں سے تعلقات رکھتا ہو۔2۔دوسرا وہ شخص جو کہ سود دیتا ہو مطلب کے ایسا کاروبار جو کہ شریعت کی نظر میں سود کے دائرے میں آئے اس سے بھی شادی نہ کریں کیونکہ سود بُری چیز ہے۔3۔ تیسرا وہ شخص جوکہ لواطق ہو ایک انتہائی بڑا گناہ ہے اس کا عذاب حضرت لوط علیہ السلام کی پوری قوم کو کھا گیا۔4۔ چوتھا وہ شخص جو ش۔راب پیتا ہو اس شخص سے بھی شادی نہ کریں ایسے شخص کو اپنی اور اپنے گھر کی کوئی پرواہ نہی ہوتی

اسکے علاوہ یہ بھی جان لیں کہ مرد کونسی خصوصیات والی عورت کو زیادہ پسند کرتے ہیں۔انسان ایک دوسرے سے کیسے متاثر ہوتے ہیں ماہرین نفسیات اسے ابھی مکمل طور پر نہیں سمجھ سکے، لیکن تحقیق اور تجربات سے کئی حقائق سامنے آئے ہیں جس سے یہ سمجھنا آسان ہوجاتا ہے کہ مرد، خواتین میں کونسی صفات زیادہ پسند کرتے ہیں۔

سیدتی ڈاٹ نیٹ کے مطابق ماہر تعلقات و نفسیات ڈاکٹر گیری براؤن نے ایک انگریزی اخبار سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’عورتوں میں جہاں کشش اہم ہے وہیں دیگر اہم خصوصیات بھی شامل ہیں جیسے خوش مزاجی، دوسروں کے ساتھ شفقت، اعتماد جس میں تکبر نہ ہو اور محبت کا احساس دلانا وغیرہ۔‘مرد جب خواتین سے ملتے ہیں تو وہ کئی خصوصیات تلاش کرتے ہیں۔ ان میں سے کچھ یہ ہیں۔

مرد کسی ایسے شخص کے ساتھ رہنا پسند نہیں کرتے جو صرف ان کی فیملی اور دوستوں کے ساتھ اچھا سلوک کرے۔ بلکہ مردوں کی خواہش ہوتی ہے ان کی زندگی میں آنے والے ہر شخص کے ساتھ اچھا سلوک کیا جائے۔شفقت و احسان ایسی صفات ہیں جن سے خاندان میں اختلافات ختم کیے جا سکتے ہیں۔ جب ہم کسی سے شفقت کا معاملہ کرتے ہیں تو اس سے ہمیں یہ احساس ہوتا ہے کہ ہم سب خاص افراد ہیں جو ضرورت کے وقت پیار، شفقت اور معافی کے مستحق ہیں۔

کسی بھی تعلق میں سب سے اہم چیز وقت کا ہنستے مسکراتے اور بہتر انداز میں گزارنا ہوتا ہے۔ پرجوش ماحول اور اچھے موڈ کی طرف دھیان رکھنا ترجیح ہونی چاہیے۔ اس سے آپ مثبت، ہلکی اور مزاح سے بھرپور زندگی گزار سکتے ہیں۔ اپنی بے شمار صفات کے ساتھ ساتھ ایک عورت مسکراہٹ کے ذریعے بھی دن کو خوشگوار بنا سکتی ہے۔ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ مرد مسکراتی ہوئی خواتین کی طرف زیادہ راغب ہوتے ہیں۔مرد حضرات کو خوش رہنے کے لیے مستقل طور پر شگفتہ خیالی کی ضرورت ہوتی ہے

جس سے وہ تحریک حاصل کر سکیں۔ کسی ایسی خاتون سے متاثر ہونا جو زندگی میں اپنے مقاصد کے حصول کے لیے پُرجوش انداز میں جُٹی ہوئی ہو، بجائے خود دلفریب ہے۔ کچھ لوگوں کو یہ مشکل دکھائی دے سکتا ہے لیکن ایک مرد کے لیے عموماً وہی خاتون دوسروں کے مقابلے میں قابلِ ترجیح ہوتی ہے جو رشتے کی مدت کے دوران باہمی مفادات کی نگہداشت کرے۔ایسے مرد و خاتون اکٹھے ہوں تو بور نہیں ہو سکتے کیونکہ ایسی خاتون جو مختلف معاملات پر جذباتیت کے ساتھ کوئی زاویہ نگاہ رکھتی ہو، اس سے بات کرنے کے لیے ہر وقت کوئی نہ کوئی موضوع موجود ہوتا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.