ذوالحجہ کا چاند دیکھتےہی 1قرآنی سورت اس طرح پڑھیں

حضرت جابر بن عبد اللہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہےکہ رسول اللہﷺ نے ارشادفرمایا:

اللہ تعالیٰ کو ان دنوں سے زیادہ محبوب اور کوئی دن نہیں ہے پوچھا گیا: کہ اللہ تعالیٰ کی راہ میں جہاد کے دن بھی ایسے نہیں۔ آپ ﷺ نے فرمایاکہ : اللہ کی راہ میں جہاد کے دن بھی ان جیسے نہیں۔ مگر جس شخص نے اللہ تعالیٰ کی راہ میں اپنے گھوڑے کو زخمی کردیا۔ اور خود بھی زخمی ہوا۔ اور ذی الحج کے مہینے کی اتنی برکات ہیں ۔ ذی الحج کے مہینے یکم تاریخ اور نو تاریخ تک روزے رکھنے کی بھی بہت سے فضیلت ہے۔ بہت ہی برکات ہیں۔ اور ان ایام میں سب سے زیادہ فضیلت اور ساتویں، آٹھویں اور نویں ذی الحج کو روزہ رکھنے کی ہے ۔ اس کے متعلق حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ ایک جوان جو احادیث نبوی ﷺ سنا کرتاتھا۔ جب ذوالحجہ کا چاند نظرآیا۔ تو اس نے روزہ رکھ لیا۔ جب وہ یہ نبی پاک ﷺ کو اس کی خبر دی گئی ۔ توآپ ﷺ نےاس کو بلایا۔

اور پوچھا تجھے کس نے اس بات پر آمادہ کیا کہ تو نے روزے رکھ لیے۔ اس نے عرض کیا یا رسول اللہ ﷺ ! میرے ماں باپ آپ پر قربان ہوں۔ یہ حج اور قربانی کے دن ہے شاید کہ اللہ تعالیٰ مجھے بھی ان کی دعاؤں میں شامل فرمادے۔ آپ ﷺنے فرمایا: تیرے ہردن کے روزے کے اجر سو غلام آزاد کرنے کےبرابر، سواونٹوں کی قربانی اور اللہ کی راہ میں دیے گئے سوگھوڑوں کے اجر کے برابر ہے۔ تو جب آٹھویں ذی الحج کا دن ہے تو اس دن کے روزے کوثواب ہزار غلام آزاد کرنے، ہزار اونٹ کی قربانی کرنےاور اللہ کی راہ میں سواری کے لیے ہزار گھوڑے دینےکے برابر حاصل ہوگا۔تو جب نواں دن ہوگا۔ تو اسے دن کے روزے کے ثواب دو ہزار غلام آزاد کرنے اور دو ہزاراونٹوں کی قربانی اور اللہ تعالیٰ کی را ہ میں سواری کےلیے دیے گئے د و ہزاور گھوڑوں کےبرابر اجر کاثواب ہوگا۔ ذی الحج کے دس دنوں کی فضیلت ہے۔

اور دس دنوں میں سے زیادہ فضیلت ساتویں ، آٹھویں اور نویں دن کی ہے۔اب آپ کو مختصر چاند دیکھنے کا وظیفہ بتائیں گے اور اس دن کے چند اعمال بتائیں گے جو آپ نے ذی الحجہ کے چاند کودیکھ کر اس عمل کو کرنا ہے۔ سب سےپہلے آپ نے جس دن ذی الحجہ کا چاند نظر آئے۔اس دن آپ نے کسی مالی امداد یا کسی کی ضرورت کو پورا کرکے اور صدقہ کرکے آپ نے اس عمل کوکرنا ہے۔ اس کے بعد جب چانددیکھنے کی بشار ت مل جائے۔ توآپ نے چاندکو دیکھ کر سب سےپہلےآپ نے اسی جگہ کھڑے ہوکر ” استغفار” کرنی ہے۔ کثرت سے “استغفار” کرنی ہے۔ ت وبہ کرنی ہے۔اللہ پاک سے گن اہوں کی ت وبہ کرنی ہے۔ اس کے بعد آپ نے اسی جگہ کھڑے ہوکر اللہ کی نعمتوں کاشکر ادا کرنا ہے۔ شکر ادا کرنے کےبعدآپ نے تین مرتبہ درود پڑھنا ہےاور اس کےبعد آپ نے ایک سوانتیس مرتبہ “سورت الکوثر” کی تلاوت کرنی ہے۔

اس کےبعدآپ دوبارہ درود پاک پڑھنا ہے۔ درود پاک آپ نے درود ابرہیمی پڑھنا ہے۔ اور اسی تعداد سے پڑھنا ہےجس تعداد سے آپ نے شروع میں درود پاک پڑھا ہوگا۔ پھر اللہ تعالیٰ سے آنے والے نئے مہینے کی رحمت کی دعا مانگنی ہے۔ بھلائی کی دعا مانگنی ہے۔ا للہ کاشکرگزار کرنا ہے۔ کہ اللہ تعالیٰ نے ہمیں یہ مہینہ دوبارہ ہماری زندگی میں ہمیں نصیب کیا ہے۔ جب اللہ کی نعمتوں آپ نے شکر کرلینا ہے۔ شکر گزاری کرلینی ہے۔ اس کے بعد آپ نے اپنے رزق کے لیے دعا مانگنی ہے۔ مال ودولت میں خیر وبرکت کی دعا مانگنی ہے۔ اور پھرآپ نے آنے والی پریشانیوں کو ٹال دینے کےلیے دعا مانگی ہے۔ جب آپ پورے خلوص دل سے اللہ تعالیٰ سے دعا مانگیں گے۔ تو اللہ تعالیٰ آپ کی ہردعا کوسنے گا۔ اور قبول فرمائےگا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.