سب کچھ ناممکن لگ رہا ہے امیدیں ٹوٹتی جارہی ہیں؟

خدا کی دنیا میں کوئی چیز ناممکن نہیں ۔ ناممکن صرف یہ ہے کہ ممکن چیز کو ناممکن طریقے سے حاصل کرنےکی کوشش کیجائے۔ وہ شخص سب سے بہترین زندگی بسرکرتا ہے۔ جو اپنی ضروریات کےلیے کسی غیر پر بھروسہ نہیں رکھتا۔ اندھیرا آئے تو اندھیرے کو نہ کوسے بلکہ چراغ جلا دیجئے۔ اس کے بعد اندھیرا اپنے آپ ختم ہوجائےگا۔ حسد اور گھمنڈ جب آدمی کے اندر داخل ہوتے ہیں۔ تو وہ عقل کو باہر کردیتےہیں۔ اگرخدا نے یہاں تک لایا ہے تو خدا ہی تمہیں اس کےپار بھی لے کے جائےگا۔ زندگی بدلنی ہوتو ایک جملے ، ایک واقعہ اور ایک استاد سے بدل جاتی ہے۔ نہ بدلنی ہوتو ہزار کتابیں کئی دانشور اور واقعات مل کر بھی آپ کا بال بیگا نہیں کرسکتے۔ موڑ آجائے تو مڑنا پڑتا ہے۔ اسے راستہ بدلنا نہیں کہتا۔ جس طرح رت کے بعد دن نے خود بخود آجانا ہے۔

اسی طرح آپ کی بے لوث خدمت کے بعد مالک نے اپنی رحمت سے ضرو ر نوازنا ہے ، دوسروں کو بے لوث دینا اللہ تعالیٰ سے شکر گزاری کی علامت ہے۔ کسی بھی حالت میں اپنا حوصلہ مت چھوڑو کیونکہ لوگ گرے ہوئے مکان کی اینٹیں بھی اٹھا کر لے جاتے ہیں۔ اللہ تعالیٰ کبھی بھی دوسرا دروازہ کھولے بغیر پہلا دروازہ بند نہیں کرتا۔ جب معاملہ اللہ تعالیٰ کےسپر د کردیا کرو تومعاملے اور اللہ تعالیٰ کے درمیان سے نکل جایا کرو۔ جب انسان کی آنکھوں سے ندامت کے آنسو بہتے ہیں تو اس پر رب کی رحمت برستی ہے۔ عادتیں نسلوں کا پتا دیتی ہیں۔ ماتھے پر کسی کے کچھ نہیں لکھا ہوتا۔ برے لوگوں کو چھوڑ کر اچھے لوگوں کی تلاش سے بہتر ہے کہ ہم لوگوں کی بری باتوں کو بھول جائیں اور ان کی اچھی باتوں کوتلاش کریں۔

کسی کوناراض کرکے اور کسی سے ناراض ہوکر نہیں سونا چاہیے کیا پتہ ہم صبح جا گ ہی نہ سکیں یاوہ ہی صبح ہمیں نہ ملے۔ جس کنویں سے لوگ پانی پیتے رہیں وہ کبھی نہیں سوکھتا۔ لو گ پانی پینا چھوڑ دیں تو کنواں سوکھ جاتا ہے یہ قدرت کا قانون ہے یہ بڑے راز کی بات ہے۔ انسا ن کو ہمیشہ مشور ہ کرنا چاہیے ، مشورہ انسا ن کو رسوائی سے بچا لیتا ہے بہترین مشورہ اللہ سے مشورہ ہوتا ہے اور بہترین فتوی دل کا فتوی ہوتا ہےآخری فتوی۔ بارش ہوتی ہے تو خالی گڑھے خود بخود بھر جاتے ہیں۔ جبکہ موٹے موٹے اور اونچے ٹیلے ویسے کے ویسے سوکھے رہ جاتے ہیں

اپنے آپ کو خالی رکھو کیونکہ خالی جھولی ہی بھر ی رہتی ہے۔ جس گھر میں چار چیزیں داخل ہوجائیں وہ گھر برباد ہوجاتا ہے۔ ز ن ا، ش راب، چ وری ، خیانت۔جب اللہ تمہیں کنا رے پر لا کھڑا کر دے تو اس پر کامل یقین رکھو کیونکہ دو چیزیں ہوسکتی ہیں یا تو وہ تمہیں تھام لے گا یا تمہیں اڑنا سیکھادے گا۔ جب اللہ نے آپ کو زندگی کو اچھا موڑ دینا ہوتا ہے تو برے اور مطلبی لوگوں کی حقیقت آپ کو دکھاتا ہے۔ اور جس نے تمہارا سب سے زیادہ دل دکھایا تم اسے معاف کردو یہی بہترین عمل ہے کسی کے ساتھ عمل اس کے سلوک کے مطابق نہیں بلکہ اپنی تربیت کے مطابق کرو۔

Sharing is caring!

Comments are closed.