”آج محرم الحرام کا چاند دیکھ کر“

عاشورہ یعنی دس محرام الحرام کے روز ملک رح میں قاضی کے پاس ایک فقیر آکر عرض گزار ہوا۔

کہ بہت غریب اور اغیار ہوں۔ آپ کو یوم عاشورہ کا واسطہ میرے لیے دس کلو آٹا، پانچ کلو گ وشت اور درہم کا انتظام فرما دیجئے۔ قاضی یعنی جج نے ظہر کے بعدآنے کو کہا۔ جب فقیر وقت مقرر پرآیاتو عصر میں بلایا۔ وہ عصر کے بعد پہنچا۔ پھر بھی کچھ نہ دیا۔ خالی ہاتھ ہی بھیج دیا۔ فقیر کا دل ٹوٹ گیا۔ وہ رنجیدہ رنجیدہ غیر مسلم کے پاس پہنچا ۔ آج کےمقدس دن کے صدقے مجھے کچھ دیدو۔ اس نے پوچھا : آج کونسا دن ہے؟ تو فقیر نے کچھ عاشور ہ کے فضائل بیان کیے۔ یہ سن کر اس نے کہا آپ نے بہت ہی عظمت والے دن کا واسطہ دیا ہے۔ اپنی ضرورت بیان کریں۔ فقیر نے اسے بھی وہی ضرور ت بیان کردی۔ اس آدمی نے دس بوری گندم، دو سو کلو گ وشت اور بیس درہم پیش کرتے ہوئے یہ کہا یہ آپ کے اہل وعیال زندگی بھر ہر ماہ اس دن کی فضیلتوں وعظمتوں کے واسطے مقرر ہے۔ رات کو قاضی صاحب نے خواب میں دیکھا کہ کوئی کہہ رہا ہے۔ نظراٹھا کر دیکھ ۔ جب اس نے نظراٹھائی تو دو عالیشان محل نظر آئے۔
ایک چاندی اور سونے کی اینٹوں اور دوسرا سرخ یاقوت کا تھا۔ قاضی نے پوچھا : یہ دونوں محل کس کے ہیں؟تو جو اب ملا، اگر تم سائل کی ضرورت پوری کردیتے ۔تو یہ تمہیں ملتے۔ مگر چونکہ تم نے اسے خالی ہاتھ لوٹا دیاتھا۔ اس لیے اب یہ دونوں محل فلاں غیر مسلم کے ہیں۔ قاضی بیدار ہوئے تو بہت پریشان تھے۔ صبح ہوئی تو غیر مسلم کو ڈھونڈتے ہوئے اس کے پاس پہنچے۔ اور اس سے پوچھا : کل تم نے کونسی نیکی کی ہے۔ اس نے پوچھا : آپ کو کیسے علم ہوا؟ قاضی صاحب اپنا خواب سنایا اور پیش کی مجھے سے ایک لاکھ درہم لے لو۔ اور کل کی نیکی مجھے بیچ دو۔ اس غیر مسلم نے کہا : میں روئے زمین کی ساری دولت لے کر بھی اس فروخت نہیں کرپاؤں گا۔ اللہ تعالیٰ کی رحمتوں و عنا یت بہت خوب ہے۔ یہ کہنے کے بعد وہ کلمہ پڑھ کر مسلمان ہوگیا۔ حضرت سیدنا عبد اللہ بن حشام رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں نئے سال یا مہینے کی آمد پر صحابہ کرام رضی اللہ عنہم ایک دوسرے کو یہ دعا ” اللھم ادخلہ علینا بالامن والایمان والسلامۃ والاسلام ورضوان من الرحمن وجوار من الشیطان ” سکھاتے ۔ آپ لو گ بھی جیسے ہی چاند نظر آئے۔ تو یہ یکم محرم الحرام کی دعا ضرور پڑھ لیں۔ چاند کی دعا ضرور پڑھ لیں۔ اور یہ وظیفہ جو آپ کو بتائیں گے یہ یکم محرم الحرام کا وظیفہ ہے۔

ایک توآپ نے کیاکرنا ہے چاند دیکھتے ہی ” سورت الملک ” کی تلاوت کرنی ہے۔ اور اس میں تیس آیات ہیں۔ اور تیس دنوں کے لیے کافی ہوجاتی ہیں۔ آپ نے ” سور ت الملک ” کو ضرور پڑھنا ہے۔ اس وظیفے کے کرتے ہی پورا مہینہ رحمتوں اوربرکتوں کی برسات ہوگی۔ اور اللہ تعالیٰ رزق کی بھی برسات عطافرمادےگا۔ وہ جو کہتے ہیں کہ کہ رزق نہیں ملتا۔ وظائف کرکے تھک چکے ہیں۔ وہ محرم الحرام میں یہ وظیفہ کریں ۔ا للہ پاک چاند کا وظیفہ کرتے ہی آپ کی تمام پریشانیاں اور مشکلیں حل فرمادےگا۔ آپ نے چاند دیکھتے ہی پہلے تو دس مرتبہ آپ نے ” سورت اخلاص ” پڑھنی ہے۔ پھرآپ نے ” یا مالک ” اسم مبارک کو آپ نے چاند دیکھتے ہی پڑھنا ہے۔ آپ نے صرف اور صرف تین سو مرتبہ پڑھنا ہے۔ انشاءاللہ! ایک مہینے کے اندر اندر ہی مالدار ہوجائیں گے۔ اورا للہ پاک آپ کو بے شماررزق عطافرمائےگا۔ پھرآپ نے اس کوروزانہ صر ف نوے مرتبہ پڑھتے رہنا ہے۔ یعنی مہینے کے آخرتک آپ نے اس عمل کوکرنا ہے۔ا للہ پاک آپ کو اتنا رزق عطا فرمائے گا کہ آپ کے پاس جگہ کم پڑجائےگی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.