”جمعہ کے دن کسی بھی وقت بس پانچ منٹ یہ عمل کر لیں۔ اَسی ہزار حاجات پوری ہوں گی۔“

ایسے لوگ جن کےپیسوں میں یا رزق میں برکت نہیں

تو پریشان نہ ہوں۔بلکہ اس مسئلے میں مبتلا افراد روزانہ نماز فجر اور عشا کی نماز کے بعد گیارہ سو مرتبہ ’’یا غنی ‘‘ کا ورد کریں۔ اللہ تعالی کے فضل کرم سے ان کے رزق میں بے پناہ اضافہ۔ اور برکت آجائے گی یہ مجرب وظیفہ رزق اور بندش کے خاتمہ کیلئے نہایت بہترین ہے۔ کوئی بھی دکاندار اور تاجر دفتر کھولنے سے پہلے ستر مرتبہ ’’یا غنی‘‘ پڑھے گا تو انشااللہ اللہ پاک کاروبار میں برکت اور رزق میں اضافہ ہو گا۔ اور کبھی بھی کسی نقصان کا خوف نہیں رہے گا ۔ جمعرات اور جمعہ کی شب اس اسم شب اس اسم مبارک ’’یا غنی ‘‘ کو انیس ہزار مرتبہ پڑھنے اور عمل کو جاری رکھنے سے انسان کو غیب سے دولت ملتی ہے ۔

اوربہت جلد کاروبار میں ترقی ہوگی اور رزق حلال کہاں کہاں سے آئے گا کہ عقل دنگ رہ جائے ۔ مسجد میں جان بوجھ کر داخل ہوتا ہوں، اور اللہ کیلئے دو رکعت نماز تحیۃ المسجد ادا کرتا ہوں؛ پھر دوسری رکعت کے آخری سجدہ کو غروب آفتاب تک لمبا کرتا ہوں، اور اس دوران سجدے کی حالت میں دعا ہی کرتا رہتا ہوں، یہاں تک کہ مغرب کی آذان ہوجاتی ہے؛ کیونکہ جمعہ کے دن آخری لمحات میں قبولیت کی گھڑی پانے کا اچھا موقع ہوتا ہے جیسا کہ ہم سب ہی اس بات سے بہت ہی اچھے سے واقف ہیں کہ ہم نے اللہ پر ہی بھروسہ رکھنا ہے اللہ ہی ہے جو ہماری تمام قسم کی مشکلات دور کر سکتے ہیں اگر ہمارا یقین اس پر مکمل نہ ہو سکا تو اس سے کیا ہو گا؟ اس سے یہ ہوگا کہ ہم جو ہیں وہ کمزورپڑ جا ئیں گے ہمیں کسی بھی قسم کی کوئی بھی تمنا نہیں رہے گی ہمارے درمیان۔ کہنے کا میرا مقصد ہے کہ تما م خواہشیں جو ہیں وہ ہماری ہمارا رب ہی پورا کر سکتا ہے اگر ہم اسی پر امید رکھتے ہیں تو اس سے ہمارے بہت سے مسئلے مسائل حل ہو جا ئیں گے۔

تو ہمیں چاہیے کہ ہم اپنے رب پر پختہ یقین رکھ کر جو بھی ہماری مشکلات ہوں وہ سب مشکلات اپنے اللہ کے سامنے رکھ دیں تا کہ ہمیں کل کو کسی بھی قسم کا کوئی بھی مسئلہ نہ ہو اب ہم بات کر تے ہیں آج ہمارے وظیفے کی تو یہاں پر ایک بات بتا تا چلوں کہ اگر ہم اس وظیفے کو کر لیتے ہیں تو ہماری اَسی ہزار حاجات پوری ہو جا ئیں گی ہماری جو بھی حاجات ہوں گی وہ پوری ہو جا ئیں گی اور اَسی ہزار تو کیا۔ ہمارے جتنے بھی کام ہوں گے ہماری جتنی بھی حاجات ہوں گی وہ پوری ہو جا ئیں گی لاکھوں کی تعداد میں جو ہماری حاجات ہوں گی وہ پوری ہو جا ئیں گی ۔ اس لیے ہمیں چاہیے کہ ہم اس عمل پر کامل یقین کے ساتھ عمل کر یں تا کہ ہمیں ہمارے تمام مقاصد میں کا میابی حاصل ہو سکے۔ ز

Sharing is caring!

Comments are closed.