”ج ن ات کے اثرات کی علامتیں“

ڈاکٹر مسعود جمال خانزادہ نے اپنی کتاب علم الرجل میں لکھا ہے کہ “یہ بات تو ثابت ہے

کہ ہر گھر میں کچھ نہ کچھ ج ن ات یا ان کے اثرات پائے جاتے ہیں‌ اور یہ جنات کبھی وہاں مستقل اور کبھی عارضی رہائش اختیار کرتے ہیں اور گھر کے رہنے والوں کو بھی اس کا ادراک کبھی کبھار ہوتا رہتا ہے اور یہ خود بھی کبھی کسی بھی شکل میں‌ظاہر ہوتے رہتے ہیں.” ڈاکٹر صاحب کے مطابق کچھ ایسی علامات ہوتی ہے جس کے ذریعے جانا جا سکتا ہے کہ گھر میں‌ جنات موجود ہیں، گھر میں‌رکھے ہوئے سامان کی جگہ خود بخود بدل جانا. یعنی ہم میں‌ سے اکثر نے نوٹ کیا ہوگا کہ گھر میں‌ جب ہم کسی مخصوص جگہ پر کچھ رکھتے ہیں تو وہ چیز دوبارہ ڈھونڈے سے وہاں نہیں ملتی بلکہ کسی اور جگہ پڑی ہوتی ہے۔

ایسے ہی عجیب و غریب آوازیں سننا خاص کر اس شخص کو سنائی دیتی ہے جو کہ گھر میں اکیلا ہو، یہ آواز بچوں کے رونے کی ہو سکتی ہیں، ایسے ہی گھر کے کسی فرد کی طرح بھی ہو سکتی ہے جو گھر میں خود موجود نہ ہو . بعض دفعہ قریب پڑی چیزوں کو الٹنا ، برتن گرانا (جاری ہے) اور ایسے ہی بجلی کے بٹن کے ساتھ کھیلنا چولہا بند کر دینا یا جلانا وغیرہ یہ بھی ایک علامت ہے . دروازے کھٹکٹانا ، یا پھر بعض دفعہ اوپر یا نیچے کی منزل سے دروازوں کے کھلنے یا بند ہونے کی آواز کا آنا . چیزوں کا گم ہو جانا خاص کر کھانے کی چیزیں جس پر اللہ کا نام نہ لیا گیا ہو. اکثرایسی چیزوں میں‌ آگ لگ جانا جہاں آگ لگ جانے کی کوئی وجہ نہ ہو . جیسے الماری ، یا گھر کا ایسا کمرہ جس کے دروازے کوتالا لگا ہو . اور خاص کر کپڑوں کا آگ پکڑ‌لینا یہ تمام اسباب ہیں۔ خوفناک آوازیں‌آنا جیسے زور زور سےکسی کے رونے کی آواز ، یا ہنسنے کی آواز جو کہ انسانی محسوس نہ ہوتی ہو. اچانک سے کسی جانور کا آجانا ، جیسے بلی یا پھر سانپ وغیرہ جو پھر ڈھونڈنے سے بھی نہ ملے . ایسے خیالات اور احساسات کا ہونا جیسے کوئی پاس بیٹھا دیکھ رہا ہے یا کوئی پاس سے گزر گیا . اسی طرح برےخواب آنا ، آوازیں آنا ، گھر میں‌ بے چینی کی کیفیت ، لڑائی جھگڑے یہ تمام علامتیں‌اس بات کی غمازی ہوتی ہیں کہ گھر میں ایک دوسری مخلوق موجود ہے (جاری ہے) جسے جنات کہا جاتا ہے . ڈاکٹر مسعود جمال خانزادہ کا کہنا ہے کہ اگر گھر میں‌جنات ہیں تو اس کا آسان حل یہ ہے کہ روزانہ گھر میں قرآن کی تلاوت کی جائے اور اس کے ساتھ صدقات لوگوں‌ کو دی جائے اور سورۃ بقرہ کی آخری آیات کا روزانہ ورد کیا جائے اور اس کو پانی پر دم کر کے اس پانی کو گھر میں‌چھڑ کا جائے اس سے جنات گھر سے چلے جاتے ہیں‌۔

Sharing is caring!

Comments are closed.