دوران پیشاب کے قطروں کا آنا۔ اگر نماز میں قطرے آ جا ئیں تو کیا نماز ہو جا تی ہے؟

وضو کرکے آیا پشا ب کا قطرہ آگات نماز مںت کھڑا ہوا تھا نماز پڑھ تھا رکوع سجدہ کررہا تھا

نماز کی حالت مںے پشاتب کا قطرہ آگا کاا مسئلہ ہے آج کل یہ مسائل بہت پش آتے ہںڑ اسی لےہ ان کو بتانا بہت اہم اور ضروری سمجھتے ہںا سب سے پہلی بات سمجھںآ کہ اگر بماتری پشاتب کے قطرے کی بما ری اگر وہ اس طرح ہو مسلسل پشانب کے قطرے آتے رہتے ہںن یا پھر اتنا وقت نہںگ ہے کہ وضو کرکے کم ازکم فرض نماز پڑھ سکے اتنا بھی وقت نہں ملتا ۔وضو کرنے گا

جسےھ وضو سے فارغ پھر سے قطرہ آگا یا وضو کرلاپ نماز مں ہی تھا فرض نماز پڑھ رہا تھا سنت وغرمہ چھوڑدیجئے اتنا وقت نہںس ملتا ہے کہ وضو کرکے فرض نماز کم ازکم ادا کرے تو ایی صورت مںم وہ مریض کے حکم مںر آجائگان ۔اگریہ مسئلہ یین معاملہ پشض آرہا ہے تو اییک صورت مں وہ ہر نماز کے وقت مںر وضو کرے گا ۔جسےھ ظہر کی نماز کا وقت آیا ظہر کی نماز کے وقت وضو کرلے گا۔ وضو کرے گا جتنی مرتبہ پشاوب کا قطرے آتا رہے مسلسل آتا رہے اس کا وضو نہں ٹوٹا وضو باقی ہے اس ظہر کے پوری نماز کے وقت مںت جتنی مرتبہ چاہے گا جتنی نمازین چاہے گا پڑھ سکتا ہے قضا نماز سنت نماز واجب نماز قرآن کی تلاوت کرنا چاہے گا بلکل کرسکتا ہے کوئی حرج نہںا اس کے حق مں پشا ب وغر ہ ناقص وضو نہں ہے ۔جسےپ ہی دوسری نماز کا وقت داخل ہوجائگاہ۔ظہر کی نماز کے وقت مںٹ وضو کاا نماز پڑھی اور عصر کی نماز کا وقت آگا

خود بخود جسےس ہی عصر کی نماز کا وقت داخل ہوگا اس کا وضو ٹوٹ گای پھر سے عصر کی نماز کلئےا وضو کرنا پڑے گا اس کے بعد عصر کی نماز پورے وقت مںی جتنی نمازیں چاہے گا پڑھ سکتا ہے ۔یہ مریض کے بارے مںا بتایا گاب ہے لکنل اگر ایسا نہں ہے اتنا وقت ملتا ہے کہ وضو کرکے کم سے کم فرض نماز پڑھ سکتا ہے تو اس کلئے ضروری ہے وہ پاک کپڑے مںو جسے ہی فوراً پشاہب کرے اور فوراً جتنا جلد ہوسکے جائے اس کلئےگ اب وہ پشا ب اس کلئےم ناپاک ہی ہے ۔اس پشاسب کے قطرے سے اس کا وضو بھی ٹوٹ جائگاو۔ اب اس کلئے فوراً وضو کرکے کم سے کم فرض نماز پڑھ لے اگر اتنا ٹائم نہںا ہے تو مسئلہ وہی ہے جو بتایا گا اتنا وقت ہے کہ فرض نماز کے ساتھ سنت نماز بھی پڑھ سکتا ہے اسی طرح بار بار تو مسلسل پشاتب کے قطرے نہںج آرہے لکنی وضو کرنے کے بعد آگئے تب بھی اس کا وضو ٹوٹ جائگا جہاں پر وہ پشا ب کا قطرہ لگا ہوگا ۔اپنے جسم پر یا کپڑے وغریہ پر اتنی ہی جگہ دھو دو یہاں پر ایک چزو اور بتادیں لوگ سمجھتے ہں کہ جب پشا ب کا قطرہ آجائگا آدمی ناپاک ہوجائگاو جتنی جگہ پر پشایب لگاقطرہ لگا ہے اتنی جگہ کو دھولجئےو آپ پاک ہوجائںر گے ۔آپ پر غسل کرنا فرض نہںگ ہوگا۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *