نو،دس محرم کا روزہ رکھنے کی فضیلت

محرم الحرام کے مہینے کا ایک ایسا وظیفہ ہے جسے آپ کریں گے ۔

تو آپ کو زندگی میں کامیابی اور کامرانی نصیب ہوگی۔ انشاءاللہ! یہ عمل آپ نے پورے مہینے میں کسی بھی ایک دن کرنا ہے۔ پھر اس کی برکت سے آپ کو ساری زندگی فائدہ پہنچتا رہےگا۔ اس عمل کی اہمیت کا فائدہ اس بات سے لگا لیں کہ جو بھی اس عمل کو فائدہ سنتا ہے۔ وہ یہی تمنا کرتا ہے کہ کسی بھی طرح یہ عمل سرانجام دے دوں۔ چاہے کتنی ہی مشکلات کیوں نہ آجائیں۔ روزے سے متعلق بتاتے ہیں کہ اگر آپ عاشورہ کا روزہ رکھنا چاہتے ہیں تو ساتھ اس کے ایک روزہ اور رکھیں ۔ اور یہ آپ کی مرضی ہے کہ آپ روزہ تونو محرم الحرام کارکھنا چاہتے ہیں یا گیارہ محرم الحرام کا رکھنا چاہتے ہیں ۔ بہرحال ایک روزہ نہ رکھیں ۔

کوشش کریں۔ کہ دو روزے رکھیں۔ عاشورے کے روزے کی بہت فضیلت ہے آپ اس کی فضیلت کا اندازہ اس بات سے لگا لیں کہ افضل ترین روزوں میں سے عاشورہ کے روزے بھی شامل ہیںَ اگر ممکن ہوتو جنہیں اللہ نے صحت اور تندرستی عطا کی ہے۔ وہ یہ روزے رکھیں۔ یہ بہت اشرف اور بابرکت ایام ہیں اور انہیں بہت ساری نسبتیں حاصل ہیں۔ حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی شہادت کے ساتھ یو م عاشورہ کو نسبت حاصل ہے اور اس کے علاوہ بھی بہت ساری ہستیوں کے سال کا دن بھی ہے اور بہت سارے واقعات اس دن رونما ہوئے ہیں۔ تو اس لحاظ سے یہ بہت ہی بابرکت اور مبارک یوم ہے۔ تو اس دن کو ذکروفکر اور عبادات میں بسر کریں۔ حضر ت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا: رمضان کے بعد سب سے افضل روزے محرم الحرام کے مہینے کے ہیں۔ جب آپﷺ سے عاشورہ کے روزے کےمتعلق پوچھاگیا۔ تو فرمایاکہ یہ روزہ گزرے ہوئے ایک سال کے گن اہوں کا کفارہ بن جاتا ہے۔

یعنی پچھلے محرم سے لے کر اس محرم تک کے روزے مع اف ہوں گے۔اللہ کے رسول اللہﷺسے اس کے بارے میں فرمایا کہ یقینا عاشورہ اللہ کے خاص دنوں میں سے ایک دن ہے۔ اگر محرم کے مہینے کے روزے کا ثواب گننے بیٹھیں تو کبھی گن نہیں پائیں گے۔ نو، دس محرم الحرام زیادہ افضل رہتا ہے یہ نسبت دس، گیارہ محرم الحرام کے۔ جو شخص نو اور دس محرم الحرام کا روزہ رکھے گا۔ اسے ایک ہزار شہیدوں کا ثواب ملےگا۔ اگر دیکھا جائے تو ایک شہید کا اتنا ثواب ہے جسے ہم کبھی گن نہیں سکتے ۔ تو جو روزہ رکھے گا۔ اسے ایک ہزار شہیدوں کا ثواب ملے گا۔ اور ساتھ ہی ایک ہزار حج کا ثواب ملے گا۔ اور آپ سب جانتے ہیں کہ ایک حج کا کتنا ثواب ہے۔ ساتھ ہی آپ کو ایک ہزار عمرہ کا ثواب بھی ملے گا۔ اور دوسال کے گن اہ بھی مع اف ہوں گے ۔ ساتھ ہی دو سال کی عبادت کا ثواب بھی ملےگا۔ یعنی اتنا ثواب ان دوروزے رکھنے کا تو کیوں ہم اتنے ثواب کو چھوڑ دیں۔ جب کہ ہمیں ایک ایک نیکی کی بہت ضرورت ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.