کامیاب زندگی کا راز۔ زندگی کی ہر حاجت پوری ۔ نمازِ کُن فَیَکُون

آج ہم آپ کی خدمت میں حاضر ہیں۔ ہم آپ کے لیے ایک ایسی نماز لے کر آ ئے ہیں

کہ جس کے ذریعہ سے اللہ سے جب بھی مدد مانگی جا تی ہے تو اللہ کن کے اشارےسے اس کو پورا فر ما دیتے ہیں جس بھی حاجت کے لیے کیا جا تا ہےتو اللہ فوراً سے اس حاجت کو قبول فر ما لیتے ہیں عقابرین کا کہنا ہے کہ جو بھی یہ عمل کر ے یعنی کہ نماز کن فیکون کو ادا کرے اور اس کے بعد اس پر شک کر ے کہ پتہ نہیں یہ عمل کرنے سے میری یہ حاجت پوری ہو گی یا نہیں تو وہ انسان کاف ر ہے کیونکہ اس نے اللہ کی ایسی آیات کے بارے میں شک کیا ہے جس کے ساتھ اللہ کی نصرت کا پروانہ ہے جس کے ساتھ اللہ کی مدد کا وعدہ ہے انشاء اللہ آپ سے ذکر کروں گی۔اس کی روایت بھی ذکر کر وں گی انشاء اللہ آپ نے اس کو غور و توجہ سے سن لینا ہے کیونکہ اس کا آپ کو مکمل طور پر فائدہ حاصل ہو گا تب جب آپ اس کو غور و توجہ سے سن لیں گے کیونکہ اس میں ان تمام آیات کا ترجمہ بھی ذکر کیا گیا ہے اور قرآنِ کریم کے حوالہ جات بھی موجود ہیں انشاء اللہ توجہ سے سننے پر آپ کو نماز کن فیکون کا طریقہ کار اور اس کی ضرورت اور اس کی افادیت اور اس کی واقعتہً سو فیصد ہونے کا آپ کو یقین ہو جا ئے گا.

اگر آپ نے اس سے فائدہ اُٹھا نا ہے تو ا س عمل کو آپ نے ضرور غور و فکر کے ساتھ سننا ہے۔ جیسا کہ میں نے ذکر کیا ہر حاجت کے لیے ساری پریشانیو کو دور کرنے کے لیے ہر مقصد میں کامیابی حاصل کرنے کے لیے کسی بھی مقصد کو پانے کے لیے کسی بھی مشکل کو آسان کر لیے اگر آپ اس عمل کو کر یں نمازِ کن فیکون کو پڑھیں گے تو اللہ آپ کی فوراً سے حاجت قبول فر ما ئیں گے۔اے جعفر صادق ؒ ایک دفعہ مدینہ منورہ تشریف لائے تولوگ ان سے علمی استفادہ حاصل کرنے کے لیے ان کے پاس آ ئے آپ نے لوگوں سے کہا کہ مجھے تعجب ہے چار قسم کے آدمیوں سے چار باتوں سے غافل ہیں قرآنِ کریم میں ان کی تمام پریشانیوں کا حل ہے لیکن وہ ان سے غافل ہو کر بیٹھے ہیں۔ مجھے تعجب ہے اس شخص پر جو مصیبت میں پھنسا ہوا ہو اور اللہ کا نام نہ لیتا ہے حالانکہ قرآنِ پاک میں حضرت ایوب ؑ کے بارے میں ارشاد ہوا سورۃ الانبیاء کی آیت نمبر چوراسی میں اپنے رب کو پکارا کہ میں مصیبت میں پھنسا ہوا ہوں اور آپ اللہ ہیں تو اس دعا کا فائدہ خود یہ بتلا یا گیا ہے سورۃ الا نبیاء کی آیت نمبر چوراسی اللہ نے فر ما یا کہ ہم نے ان کی دعا قبول کی

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *