”سارے جراثیم کتے کی موت مرجائیں گے“

ایک دفعہ رسول اللہ ﷺ تشریف فرماتھے اور صحابہ کرام ؓ بھی آپ کے ارد گرد بیٹھے ہوئے تھے

نبی کریم ﷺ نے فرمایا کہ اللہ تعالیٰ نے مجھ پر بڑے بڑے احسانات کئے ہیں جو مجھ سے پہلے کسی نبی پر نہیں کئے پھر فرمایا میں بیٹھا ہوا تھا کہ جبرائیل ؑ آئے اور کہا اے محمد ﷺ اللہ تعالیٰ حکم دیتے ہیں کہ میں نے آپ کے پاس اپنی کتاب بھیجی اور اس کتاب میں ایک سورت ایسی بھیجی ہے۔کہ اگر وہ سورت تورات میں ہوتی تو حضرت موسیٰ ؑ کی امت میں سے کوئی شخص یہود نہ ہوتا اور اگر یہ سورت انجیل میں ہوتی تو حضرت عیسیٰؑ کی امت میں سے کوئی شخص نصرانی نہ ہوتا اور اگر یہ سورت زبور میں ہوتی تو حضرت داؤد ؑ کی امت میں سے کوئی شخص بت خانہ کا خادم نہ ہوتا یہ سورت میں نے قرآن پاک میں اس لئے اتاری ہے۔کہ آپ کے امتی اس سورت کی برکت سے قیامت کے روز دوزخ کے عذاب سے اور قیامت کی ہولناکیوں سے بچ جائیں جبرائیلؑ نے مزید فرمایا اے محمد ﷺ اس خدا کی قسم جس نے آپ کو تمام کائنات کے لئے برحق نبی بنا کر بھیجا ہے اگر روئے زمین کے تمام سمندر سیاہی بن جائیں اور تمام عالم کے درخت قلم بن جائیں اور سات آسمانوں اور سات زمینیں کاغذ بن جائیں۔پھر بھی ابتدائے عالم سے قیامت تک لکھتے رہنے کے باوجود اس سورت کی فضیلتیں نہیں لکھی جاسکیں گی وہ سورت مبارک کونسی ہے ؟وہ سورہ ہے سورۃ الفاتحہ یہ تمام دردوں اور بیماریوں کے لئے شفاء ہے جو بیماری کسی علاج سے ٹھیک نہ ہوتی ہو وہ سورہ فاتحہ سے ٹھیک ہوجاتی ہے انسان جب بیماریوں سے عاجز آجاتا ہے تو ڈاکٹر بھی اسے روحانی علاج کا مشورہ دیتےہیں۔

کئی بار لوگوں کو اللہ کے کلام سے شفاپاتے دیکھا اور سناہے جن کا اب عقیدہ ہے کہ جو کام میڈیسن نہیں کرسکتی وہ اللہ کا کلام سب سے بہتر کرسکتا ہے اور یہ سب سے بہترین اور افضل علاج ہے جس میں شفائے کاملہ موجود ہے اس تحریر میں سورہ فاتحہ کے حوالے سے ایک چھوٹا سا عمل بتایا جارہا ہے کہ جو لوگ آج کے ان حالات میں گھر میں بیمار ہوجاتے ہیں بخار ہوجاتا ہے کھانسی ہو جاتی ہے گلا خراب ہوجاتا ہے یا زکان ہوجاتا ہے۔اور اس کے علاج کے لئے وہ ڈاکٹروں کا رخ کرتے ہیں اور آج کے اس گزرتے ہوئے وقت میں ڈاکٹر بجائے علاج کرنے کے ان کو کرونا کے مرض میں ڈال دیتےہیں اور ان پر بلاوجہ کرونا کی بیماری کا الزام لگادیاجاتا ہے۔اور بجائے ان کا علاج کرنے کے ان کو ہسپتالوں میں ہی داخل کر لیاجاتا ہے اور آج کے اس نازک حالات میں ہر انسان باہر جانے سے ڈرتا ہے اور چاہتا ہے کہ گھر بیٹھ کر ہی اپنی ان چھوٹی چھوٹی بیماریوں کا علاج کر لے تو ان کے لئے آپ لوگوں کو بتاتے چلے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا سورہ فاتحہ میں ہر بیماری سے شفا ہے۔اور اس کے پڑھنے کا طریقہ یہ ہے کہ دن میں دو مرتبہ آپ نے پانی کا استعمال کرنا ہے اگر گھر میں آپ کا کوئی بھی بھائی ہے بہن ہے آپ کے والد ہیں آپ کی والدہ ہیں کوئی بھی کھانسی بخار گلا خراب یا زکام میں مبتلا ہے۔تو آپ نے کرنا یہ ہے کہ دن میں دو بار آدھا گلاس پانی کا لینا ہے اور اس پر بسم اللہ الرحمن الرحیم پڑھ کر گیارہ مرتبہ سورت الفاتحہ پڑھ لینی ہے اور اس کے بعد اس پانی پر دم کر کے آپ نے پی لینا ہے یاد رکھیں جو پانی آپ نے استعمال کرنا ہے وہ نیم گرم پانی ہونا چاہئے زیادہ گرم پانی نہیں ہونا چاہئے کہ آپ سے پیا ہی نہ جا سکے ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *